Tuesday, March 23, 2010

یوم پاکستا ن


ایک یہی پہچان تھی میری ، اس پہچان سے پہلے بھی
پاکستان کا شہری تھا ، پاکستان سے پہلے بھی
یوم پاکستا ن مبارک ہو

4 comments:

Tauqeer said...

Uff yeh picture itni purani hochuki still it is very popular!

hehe

Anaa said...

hmm,,, Old IS Gold... :)
but it is beautiful...

Tauqeer said...

No doubt.

طارق راحیل said...

ہمارے نبی محمد مصطفی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے استقبال رمضان کے خطبہ میں ارشاد فرمایا:

ایھا الناس انہ قد اقبل علیکم شہر اللہ بالبرکة و الرحمة و المغفرة‘ شہر ھو عنداللہ افضل الشھور و ایامہ افضل الایام و لیالیہ افضل اللیالی و ساعاتہ افضل الساعات ھو شہر دعیتم فیہ الی ضیافة اللہ و جعلتم فیہ من اھل کرامتہ اللہ‘ انفاسکم فیہ تسبیح‘ ونو مکم فیہ عبادة و عملکم فیہ مقبول‘ و دعاؤکم فیہ مستجاب فاسالوا اللہ ربکم بنیات صادقة و قلوب طاہرة ان یوفقکم صیامہ و تلاوة کتابہ‘ فان الشقی من حرم غفران اللہ فی ھذا الشہرالعظیم

ایھا الناس ان ابواب الجنان فی ھذا الشہر مفتحة فسلوا ربکم ان لا یغلقھا علیکم و ابواب النیران مغلقہ فاسئلوا اللہ ربکم ان لا یفتحھا علیکم و الشیاطین مغلولة فسئلوا ربکم ان لا یسلطھا علیکم

یا ایھا الناس من حسن منکم فی ھذا الشہر خلقہ کان لہ جواز علی الصراط یوم تزل فیہ الاقدام ومن خفف من ھذا الشھر عما مملکت یمینہ‘ خفف اللہ علیہ حسابہ‘ ومن کف فیہ شرہ‘ کف اللہ عنہ غضبہ یوم یلقاہ و من اکرم فیہ یتیما‘ اکرمہ اللہ یوم یلقاہ و من قطع فیہ رحمہ قطع اللہ عنہ رحمتہ یوم یلقاہ و من تلا فیہ آیة من القرآن کان لہ مثل اجرمن ختم القرآن فی غیرہ من الشھور

"اے لوگو! اللہ تعالیٰ کا یہ ماہ (رمضان) مبارک برکت‘ رحمت اور مغفرت کے ساتھ تمہاری طرف آ رہا ہے۔ یہ وہ مہینہ ہے جو خدا کے نزدیک سب مہینوں سے افضل ہے۔ اس کے دن سب دنوں سے بہتر ہیں‘ اس کی راتیں سب راتوں سے افضل ہیں۔ تمہیں اس مہینے اللہ تعالیٰ کی ضیافت کے لئے بلایا گیا ہے۔

اس مہینے میں تمہیں اللہ کی تکریم سے نوازا گیا ہے‘ اس مہینے میں تمہاری سانس تسبیح الٰہی‘ تمہاری نیندیں عبادت‘ تمہارے عمل قبول اور تمہاری دعائیں مستجاب ہیں۔ پس اپنے رب سے خالص نیت اور پاک دلوں کے ساتھ سوال کرو کہ وہ تمہیں اس مہینے کے روزوں اور تلاوتِ قرآن مجید کی توفیق عنایت فرمائے۔

اس لئے کہ شقی اور بدبخت وہ شخص ہو گا‘ جو اس باعظمت مہینے میں اللہ کی مغفرت سے محروم رہے۔

اے لوگو! اس مہینے میں جنت کے دروازے کھول دیئے گئے ہیں۔ اپنے رب سے دعا کرو کہ وہ تمہارے لئے رحمت کے دروازے بند نہ کرے اور دوزخ کے دروازے تمہارے لئے بند کر دیئے گئے ہیں اور اپنے رب سے سوال کرو کہ یہ دروازے تمہارے آگے نہ کھولے جائیں۔ اس مہینے میں شیطانوں کو طوق ڈال دیئے جاتے ہیں‘ تم اپنے رب سے یہ سوال کرو کہ شیاطین تم پر (دوبارہ) مسلط نہ ہوں۔

اے لوگو! جو شخص اس مہینے میں اپنے اخلاق کو حسن بنائے‘ اس دن کے لئے پل صراط کا پروانہ دیا جائے گا‘ جب لوگوں کے قدم ڈگمگائیں اور لغزش کھائیں گے۔ جو شخص اس مہینے میں اپنے غلام سے نرمی سے پیش آئے گا‘ اللہ رب العزت اس سے بہت ہلکا حساب لے گا۔ جس کے شر سے لوگ محفوظ رہیں گے‘ روز قیامت اللہ تعالیٰ اس پر غضب ناک نہ ہو گا‘ جو شخص اس مہینے میں کسی یتیم کی تکریم کرے گا۔ خداوند کریم اس روز اپنے بندے کی تکریم کرے گا‘ جس دن وہ خدا کی بارگاہ میں پیش ہو گا۔

جو شخص اس مہینے میں صلہ رحمی کرے گا‘ روز قیامت خدا کی رحمت اس کے شامل حال ہو گی اور جو شخص اس مہینے میں قطع رحم کرے گا وہ روز قیامت اللہ تعالیٰ کی رحمت سے دور رہے گا اور جو شخص اس ایک مہینے میں ایک قرآنی آیت کی تلاوت کرے گا‘ اسے دوسرے مہینوں میں پورا قرآن ختم کرنے کا اجر و ثواب دیا جائے گا۔"